انٹرنیٹ ہے یہاں پر عام زندگی سے زیادہ فراڈ ہوتے ہیں

انٹرنیٹ ہے یہاں پر عام زندگی سے زیادہ فراڈ ہوتے ہیں تو کیسے بچ سکتے ہیں ؟ویسے تو سائبر کرائم سیل موجود ہے پاکستان میں لیکن پتہ نہیں یہ کن لوگوں کیلئے بنایا گیا ہے ۔ آپ کو پتہ چلے تو مجھے بھی بتائے گا ۔ پہلی بات تو یہ ذہن میں ضرور رکھیں !نوٹ: ۔ جب تک لالچی لوگ زندہ ہیں ۔ ۔ ۔ ٹھگ اور فراڈیے کبھی بھوکے نہیں مرتے 1- لوگ فراڈ کرتے نہیں ہم خود فراڈ کرواتے ہیں اپنے ساتھ وہ کیسے چلیں مان لیں آپ انٹرنیٹ پر کام کرتے ہیں اور یہاں پر کوئی بندہ آپ کو کہتا ہے کہ انٹرنیٹ سے پیسے کمانے کیلئے آپ کے پاس سکلز ہونا ضروری ہیں (یا آپ کو انٹرنیٹ سے پیسے کمانے کیلئے صبر کرنا ہوگا اور بہت محنت درکار ہوگی آپ کو ) تو آپ نے اُس بندے کو تو اپنا دشمن سمجھنا ہے اور آپ نے یہی کہنا ہے کہ یہ بندہ فضول بکواس کرتا ہے ۔ ۔ ۔ وہی پر اگر کوئی فراڈیا بندا آپ کو کہتا ہے کہ اگر انٹرنیٹ سے پیسے کمانے ہیں تو 10 ہزار یا 20 ہزار یا 50 ہزار روپے انویسٹ کرو تو آپ کو روزانہ 10 ڈالرز یا 20 ڈالرز کی ارننگ ہوگی تو آپ نے کہنا ہے واہ ، یہ شہزادہ بندہ ہے اس سے اچھا بندہ دُنیا میں کوئی نہیں اور آپ اپنی محنت سے کمائی ہوئی رقم اُس کے ہاتھوں تھما دیتے ہیں ۔ ۔ ۔ پھر کیا ہوتا ہے وہی جو ہمارا آج کا موضوع ہے یعنی فراڈ ۔ ۔ ۔ اور پھر آپ کہتے ہیں کہ انٹرنیٹ پر ہوتا ہی فراڈ ہے ۔ 2- انٹرنیٹ پر اگر آپ لوگوں کو کوئی چیز یا سروس مہنگی ملے تو آپ کہتے ہیں یہ تو بندہ لوٹ رہا ہے ۔ چلیں مان لیتے ہیں آپ کو گوگل ایڈسینس خریدنا ہے آپ نے فیسبک پر کسی گروپ میں پوسٹ لگائی کہ مجھے گوگل ایڈسینس چاہیے تو وہاں پر آپ کو مختلف لوگ رابطہ کرتے ہیں ۔ ۔ ۔ تو پھر کیا ہوتا ہے اگر آپ کو کوئی ٹرسٹڈ بندہ زیادہ ریٹ دیتا ہے تو آپ کہتے ہیں کہ لوٹ رہے ہو ۔ ۔ ۔ وہیں پر اگر کوئی بندہ آپ کو بولے کہ میں آپ کو گوگل ایڈسینس 1500 روپے میں دونگا تو آپ کہتے ہیں یہ اچھا بندہ ہے اس سے لے لیتا ہوں ۔ ۔ ۔ تو ہوتا کچھ یوں ہے کہ آپ اُس کو پیسے دیتے ہیں تو نتیجہ میں آپ کو وہ بندہ فیسبک پر بلاک کردیتا ہے ۔ ۔ ۔ پھر آپ کہتے ہیں کہ انٹرنیٹ پر فراڈیے بیٹھے ہیں ۔ ۔ ۔ 3- فراڈ سے بچنا کیسے ہے ؟ * اگر آپ کوئی چیز لینا چاہتے ہیں یا کوئی چیز بیچنا چاہتے ہیں تو جس گروپ میں سے لینی ہے یا بیچنی ہے اُس گروپ کے ایڈمن کو ضرور اطلاع کریں اور اُس گروپ میں جس سے لینی ہے یا دینی ہے اُس کی پروفائل کا لنک پوسٹ کرکے اُس کے بارے میں ضرور پوچھیں کہ یہ ڈیل ہے اور یہ بندہ ہے کیا ڈیل کرنی چاہیے ؟ * کوشش کریں کہ اپنے شہر کا کوئی سیلر تلاش کریں تا کہ آپ اُس سے فیس ٹو فیس مل کر ڈیل کرسکیں ۔ اگر نہیں تو کسی نا کسی تھرڈ ٹرسٹڈ پرسن کو ڈیل کا حصہ ضرور بنائیں تا کہ نقصان سے بچ سکیں ۔ * چیز سیل کرتے وقت پیسے کم مل رہے ہیں اس بات کو نہ دیکھیں یہ دیکھیں کہ بندہ ٹرسٹڈ ہے تو ڈیل کر لینی چاہیے۔* چیز خریدتے وقت بہت مہنگی مل رہی ہے اس بات پر توجہ مت دیں بلکہ یہ دیکھیں کہ بندہ ٹرسٹڈ ہے فراڈ کا چانس نہیں ہے تو ڈیل کرلینی چاہیے* لوگوں پر اندھا دھند یقین نہیں کرنا چاہیے اچھی طرح سرچ کرکے پھر ہی کوئی ڈیل کریں ۔4- آج کل لوگوں کو سیکھانے کے نام سے بھی لوٹا جاتا ہے یعنی کے کورسز کے حوالے سے فیس لی جاتی ہے بعد میں اُن کو وہ نالج نہیں دیا جاتا جس کے پیسے لیے تھے ۔ **** میں آپ کو کہونگا کہ پہلے تو کسی کا پیڈ کورس جوائن کرنے کی ضرورت ہی نہیں یوٹیوب سے جاکر سیکھیں ۔ کیونکہ یوٹیوب پر سب کچھ موجود ہے جس نے سیکھنا ہے وہ یوٹیوب کی ویڈیوز سے بھی سیکھ سکتا ہے جس نے نہیں سیکھنا وہ چاہے 50 ہزار والا کورس ہی کیوں نا جوائن کرلے نہیں سیکھے گا ****میں یہ نہیں کہتا کہ ہر پیڈ کورس کروانے والا فراڈیا ہے ۔ ۔ ۔ کچھ لوگ ہیں جو ایسا کام کرتے ہیں اور آپ میں سے اکثر اُنہی کچھ لوگوں پر یقین کرتے ہیں سچ بتانے اور ریل سیکھانے والوں کی بات پر تو آپ لوگ یقین ہی نہیں کرتے جس وجہ سے آپ کے ساتھ دھوکہ ہوتا ہے ۔ ۔ ۔ ! تو برائے مہربانی اگر آپ لوگ سدھر جائیں تو مجال ہے کسی کی کہ وہ آپ کیساتھ فراڈ کرجائے ۔ ۔ ۔ اپنی آنکھیں کھولیں اور مخلص لوگوں کی پہچان کریں ۔ ۔ ۔ مخلص لوگ بہت کم ملتے ہیں جن کو تلاش کرنے میں شاید سالوں بیت جاتے ہیں ۔ ۔ اپنا لالچی پن ختم کریں اور توجہ کیساتھ درست طریقے پر عمل کریں ۔ ۔ ۔ اللہ ہم سب کو ہدایت دے ۔ ۔ ۔ آمین

Leave a Reply